25

بھارت میں گائے ذبح کرنے پر مشتعل ہجوم کے ہاتھوں پولیس افسر ہلاک


مشتعل ہجوم نے گاڑیوں اور املاک کو نذر آتش کر دیا۔ فوٹو : بھارتی میڈیا

مشتعل ہجوم نے گاڑیوں اور املاک کو نذر آتش کر دیا۔ فوٹو : بھارتی میڈیا

نئی دہلی: بھارت میں گائے ذبح کرنے پر مشتعل مظاہرین اور پولیس کے درمیان تصادم میں پولیس انسپکٹر اور شہری ہلاک جب کہ ایک سپاہی شدید زخمی ہوگیا۔

بین الاقوامی خبر رساں ادارے کے مطابق بھارتی ریاست اترپردیش کے مقامی گاؤں میں گائے ذبح ہونے کے خلاف شہری مظاہرہ کررہے تھے جسے روکنے کے لیے پولیس پارٹی پہنچی، جہاں دیہاتیوں اور پولیس کے درمیان جھڑپ نے تصادم کی شکل اختیار کرلی۔

مظاہرین کے پتھراؤ سے سر پر ضرب لگنے کے باعث پولیس انسپکٹر اور اہلکار شدید زخمی ہوگئے جنہیں اسپتال منتقل کیا گیا تاہم زیادہ خون بہہ جانے کے باعث پولیس انسپکٹر ہلاک ہوگیا جب کہ پولیس اہلکار کی حالت نازک ہے۔ ایک نوجوان کی بھی دوطرفہ فائرنگ سے ہلاک ہونے کی اطلاع ہے۔

پولیس انسپکٹر کی ہلاکت کے بعد علاقے میں کشیدگی میں اضافہ ہوگیا، پولیس کی بھری نفری نے مظاہرین کی گرفتاری کے لیے گاؤں کا محاصرہ کرکے گھر گھر تلاشی لی جس کے دوران درجن بھر شہریوں کو حراست میں لے لیا گیا۔

واضح رہے کہ بھارتی سپریم کورٹ نے مشتعل ہجوم کے ہاتھوں معصوم اور نہتے لوگوں کی ہلاکت کو روکنے کے لیے پارلیمنٹ کو قانون سازی کا حکم دیا تھا تاہم بھارتی ادارے خود مشتعل ہجوم کے ہاتھوں محفوظ نہیں۔





Source link

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں