19

کراچی: تنخواہیں نہ ملنے پر بحریہ ٹاؤن ملازمین اور ٹھیکیداروں کا ہائی وے پر احتجاج ختم | پاکستان


کراچی: تنخواہوں کی عدم ادائیگی پر سپر ہائی وے پر نجی ہاؤسنگ ادارے بحریہ ٹاؤن کے ملازمین اور ٹھیکیداروں نے احتجاج کیا جس کے باعث کراچی سے حیدر آباد اور حیدرآباد سے کراچی جانے والی گاڑیوں کی لائن لگ گئی۔

احتجاج کے باعث سپرہائی وے کے دونوں ٹریکس پر ٹریفک 3 گھنٹے سے زائد سے بند ہے جبکہ مظاہرین نے سپرہائی وے پر کاٹھور سے نیشنل ہائی وے جانے والا لنک روڈ بھی بند کردیا۔

ملازمین کا موقف ہے کہ ان کے گھر کے چولہے ٹھنڈے ہوگئے ہیں—۔جیو نیوز اسکرین گریب

احتجاج میں شہری، بلڈرز، ٹھیکیدار اور ملازمین بھی شریک ہوئے۔۔

ملازمین کا موقف تھا کہ انہیں تنخواہیں نہیں مل رہیں اور گھر کے چولہے ٹھنڈے ہوگئے ہیں۔

مظاہرین نے وزیراعظم عمران خان اور چیف جسٹس ثاقب نثار سے معاملہ حل کرنے کی اپیل کی۔

بعد ازاں پولیس اور مظاہرین کے درمیان مذاکرات ہوئے جس کے بعد مظاہرین نے دھرنا ختم کرنے کا اعلان کردیا۔

مظاہرین کی جانب سے دھرنا ختم کرنے کے بعد 6 گھنٹوں سے بند سپرہائی وے ٹریفک کےلیے کھول دی گئی۔

مظاہرین نے سپرہائی وے پر کاٹھور سے نیشنل ہائی وے جانے والا لنک روڈ بھی بند کردیا—۔جیو نیوز اسکرین گریب

دوسری جانب بحریہ ٹاؤن کے ملازمین اور ٹھیکیداروں نے توحید کمرشل سے ریلی بھی نکالی، جس میں اوورسیز پاکستانیوں کے اہلخانہ اور سرمایہ کار بھی شریک ہوئے۔

علاوہ ازیں عام شہریوں نے بھی بحریہ ٹاؤن کے خلاف جاری مہم کو مسترد کرتے ہوئے کہا ہے کہ وہ پانچ سال کی قسطیں جمع کراچکے ہیں، پتہ نہیں سرمایہ کاری کا کیا بنےگا۔





Source link

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں